Ahmad faraz poetry | ahmad faraz ki shayari

0
54

Ahmad Faraz poetry was characterized by its simplicity, yet profound impact. He had a unique ability to express complex emotions in a clear and accessible manner, which resonated deeply with his audience. His verses often explored themes of love, longing, patriotism, and social justice.

کچھ محبت کا نشہ پہلے ہم کو تھافرازؔ

دل جو ٹوٹا تو نشے سے محبت هوگئی

Kuch mohabbat ka Nasha pehly hum ko tha

Faraz Dil Jo tuta to nashe se mohabbat Ho Gai

ahmad faraz poetry
ahmad faraz poetry in urdu 2 lines

محبت کے بعد محبت ممکن ہے فرازؔ

پرٹوٹ کے چاہناصرف ایک بارہوتاہے۔

Mohabbat ky bad mohabbat mumkin Hai Faraz

Per Tut ke chahana sirf ek bar Hota

Ahmad faraz poetry

یونہی موسم کی ادا دیکھ کے یاد آیاہے

کس قدر جلدبدل جاتے ہیں انسان جاناں۔

Yun Hi mausam ki ada dekh kar Yaad aya Hai

Kis Kadar jald badal jate Hain insan jana

نظم دُلہن تھی تیری ، غزل تیری محبوبہ

الوداع احمد فرازؔ ! جا تجھ کو خدا کو سونپا ۔

Nazm Dulhan Thi Teri ghazal Teri mehbooba

Alvida Ahmed Faraz ja tujh ko Khuda Ko sonpa

Ahmad faraz poetry

ahmad faraz poetry

اس شخص سے فقط اتناساتعلق ہے فرازؔ

وہ پریشان ہوتو ہمیں نیندنہیں آتی ۔

Us shakhs se faqt itna sa talluk Hai Faraz

wo pareshan Ho To hamen nind nahi aati

دیوار کیا گری میرے کچے مکان کی

لوگوں نے میرے گھر سے رستے بنالیے۔

Deewar kya giri mere kache makan ki

Logon ne mery ghar sy Rasty banaa Liye

Ahmad faraz poetry

ہوئی ہے شام تو آنکھوں میں بس پھر تو

کہاں گیاہے میرے شہرکے مسافر تو۔

Hui hai sham to aankhon mein bus FIR to

Kahan gaya hai mere shahar ke musafir to

Ahmad faraz poetry


افسوس کوئی پوچھتا نہیں دل کاحال فرازؔ

ہر کوئی کہہ رہا ہے تیرے رنگ کوکیاہوگیا۔

Afsos Koi puchta Nahin Dil ka Hal Faraz

Har Koi kah Raha Hai Tere rang Ko Kya Ho Gaya


اَب کیوں روشنی سے ڈرتے ہوفرازؔ

تم توکہتے تھے مجھے چاند چاہیئے۔

Ab kyon Roshni se darte ho Faraz

Tum To kehte the use Chand chahiye

Ahmad faraz poetry


یہی دل تھا کہ ترستاتھامراسم کے لیے

اب یہی ترک تعلق کے بہانے مانگے

Yahi dil tha ki tarasta tha Marasim ke liye

Ab yahi turk taloq ky bahany mangy


ضبط غم اس قدر آساں نہیں فرازؔ

آگ ہوتے ہیں وہ آنسو جو پیے جاتے ہیں

Zabt gham is Kadar asan Nahi Faraz

Ag hote hain wo ansu Jo piye jaate Hain

سُنا ہے ربط ہے اس کو خراب حالوں سے

سو اپنے آپ کو بربادکرکے دیکھتے ہیں۔

Suna hai rabt hai usko kharab halon sy

So apne aap ko barbad Karke dekhte hain

کہ اپنے حرف کی تو قیر جانتاتھافرازؔ

اسی لئے کفِ قاتل پہ سراسی کارہا۔

Ky apne hath ki toqeer janta tha Faraz

Is liye kaf Qatil pay sarasi ka Raha

Ahmad faraz poetry
میں رات ٹوٹ کے رویا تو چین سے سویا

کہ دل کا زہرمری چشم ترسے نکلاتھا۔

Main Rat Tut ky Roya To chain sy soya

ky dil ka zehar Meri chashme tar sy nikla tha

Ahmad faraz poetry
بندگی ہم نے چھوڑدی ہے فرازؔ

کیا کریں لوگ جب خداہوجائیں۔

Bandagi hum ny chor di hai Faraz

Kya Krin log Jab Khuda ho jaaye

چلا تھا ذکر زمانے کی بے وفائی کا

سو آگیا ہے تمہارا خیال ویسے ہی ۔

Chala tha zikr zamane ki bewafai sy

So a gya hai tumhra khiyal wesy Hi

نیند کیا آئے گی فرازؔ

موت آئی تو سولیں گے۔

Nind kya aayegi Faraz

maut aei to so lenge

محبت کرسکتے ہو تو خُداسے کروفرازؔ

مٹی کے کھلونوں سے کبھی وفانہیں ملتی۔

Mohabbat kar sakty ho to Khuda sy Kro Faraz

Mitti ky khilono sy kabhi wafa Nahi milti


محبت ان دنوں کی بات ہے فرازؔ

جب لوگ سچے اورمکان کچے تھے

Mohabbat in dinon ki baat Hai Faraz

Jab log sache aur makaan kache thy

Ahmad Faraz Poetry in Urdu
کون کس کے ساتھ مخلص ہے فرازؔ

وقت ہر شخص کی اوقات بتادیتاہے۔

Kaun kiske sath mukhalis Hai Faraz

waqt har shakhs ki aukat Bata deta hai

Ahmad Faraz Poetry in Urdu
تیرے وعدے پے جیے ہم، تو یہ جان جھوٹ جانا

کہ خشی کی چیز کبھی بھی دامان میں نہیں آتی

Tere wade pe jiye hum, to yeh jaan jhoot jana
Ke khushi ki cheez kabhi bhi daaman mein nahi aati

وہ جو انسانوں کو بکھیر دیتا ہے
اک دن اپنے دل کی بات کرتا ہوں

Woh jo insano ko bikher deta hai
Ek din apne dil ki baat karta hoon

کुچھ اور بھی تھا میرا مقام وقت کے ساتھ
وہ چھوٹ گیا ہے مگر یادیں تیری آئیں گی

Kuch aur bhi tha mera maqam waqt ke saath
Woh chhoot gaya hai magar yaadein teri aayengi

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here